رسائی کے لنکس

مزید

پاکستان میں کرونا سے مزید 42 ہلاکتیں، دنیا بھر میں ویکسین کی چھ ارب ڈوزز لگ گئیں

آخری بار اپڈیٹ کیا گیا ستمبر 21, 2021

آسٹریلیا: ریاست وکٹوریا میں کرونا کا پھیلاؤ جاری

آسٹریلیا کی ریاست وکٹوریا میں اتوار کو کرونا وائرس کے مزید 779 کیسز اور 2 اموات رپورٹ ہوئی ہیں۔

خیال رہے کہ آسٹریلیا کی دو ریاستیں وکٹوریا اور نیو ساؤتھ ویلز کو کرونا وبا کے ڈیلٹا ویریئنٹ پر قابو پانے میں مشکلات کا سامنا ہے۔ جب کہ ان ریاستوں کی 80 فی صد آبادی کی ویکسی نیشن جلد مکمل کرنے کے عمل کو تیز کر دیا گیا ہے۔

آسٹریلیا میں اب تک تین چوتھائی آبادی کو کرونا ویکسین کی ایک خوراک جب کہ نصف آبادی کو ویکسین کی دونوں خوراکیں لگ چکی ہیں۔

وزیراعظم اسکاٹ موریسن کا ایک اتوار کو انٹرویو میں کہنا تھا کہ وہ امید کرتے ہیں کہ ریاستیں جب 80 فی صد آبادی کو ویکسین لگانے کا ہدف عبور کر لیں گی تو پابندیاں نرم کر دی جائیں گی۔

18:30

دنیا بھر میں کرونا ویکسین کی چھ ارب ڈوزز لگا دی گئیں


امریکہ کی جانز ہاپکنز یونیورسٹی، ریسورچ سینٹر کے اعداد و شمار کے مطابق دنیا بھر میں اب تک کرونا ویکسین کی چھ ارب خوراکیں لگا دی گئی ہیں۔

سینٹر کے مطابق ہفتے کی دوپہر تک دنیا بھر میں چھ ارب سے زائد افراد کو ویکسین کی کم سے کم ایک خوراک لگ چکی ہے۔

یہ اعداد و شمار ایسے وقت میں سامنے آئے ہیں جب امریکہ کے صدر جو بائیڈن نے جمعے کو اعلان کیا تھا کہ امریکہ میں چھ کروڑ شہری ویکسین کے بوسٹر شاٹس لگوانے کے اہل ہیں۔

امریکی صدر نے زور دیا تھا کہ اہل افراد فوری طور پر بوسٹر شاٹس لگوا لیں کیوں کہ وہ بھی بہت جلد بوسٹر ڈوز لگوا لیں گے۔

امریکہ میں صحتِ عامہ کے نگراں ادارے سینٹرز فار ڈیزیز کنٹرول اینڈ پروینشن (سی ڈی سی) نے جمعرات کو 65 برس یا اس سے زائد عمر کے امریکی شہریوں کے لیے فائزر ویکسین کے بوسٹر شاٹس کی منظوری دی تھی۔

18:24

پاکستان میں کرونا مثبت کیسز کی شرح چار فی صد سے کم

پاکستان میں کرونا وائرس کی چوتھی لہر بتدریج کمزور پڑ رہی ہے اور مثبت کیسز کی شرح چار فی صد سے بھی کم ہو چکی ہے۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کے مطابق پاکستان میں انتہائی نگہداشت کے وارڈز میں زیرِ علاج مریضوں کی تعداد بھی مسلسل کم ہو رہی ہے۔

ہفتے کو ملک بھر میں کرونا کی تشخیص کے لیے 44 ہزار 712 ٹیسٹ کیے گئے جن میں سے 1780 مثبت آئے ہیں۔

پاکستان میں کرونا وائرس کے باعث اب تک 27 ہزار 566 افراد ہلاک ہو چکے ہیں جب کہ 12 لاکھ 38 ہزار 668 افراد میں اب تک وائرس کی تصدیق ہو چکی ہے۔

18:14

پاکستان میں اموات ساڑھے 27 ہزار ہو گئیں

پاکستان میں کرونا وائرس سے اموات کی مجموعی تعداد ساڑھے 27 ہزار ہو گئی ہے۔

سرکاری اعداد و شمار کے مطابق ملک بھر میں وبا سے مزید 42 افراد ہلاک ہوئے ہیں جس سے اموات کی تعداد 27 ہزار 524 تک پہنچ گئی ہے۔

وبا سے مزید 2060 افراد کی متاثر ہونے کی بھی تصدیق ہوئی ہے۔

پاکستان میں کرونا کے ٹیسٹ مثبت آنے کی شرح 4.58 فی صد ہے۔

21:51 25.9.2021

جنوبی کوریا میں ایک بار پھر کیسز میں اضافہ

جنوبی کوریا میں رواں ہفتے ہونے والی تین چھٹیوں کے بعد یومیہ کیسز کی تعداد پہلی بار تین ہزار سے تجاوز کر گئی ہے۔

جنوبی کوریا کی متعلقہ ایجنسی کا کہنا ہے کہ جمعے کو رپورٹ کیے جانے والے تین ہزار 273 کیسز، ایک دن پہلے رپورٹ کیے جانے والے کیسز کی تعداد سے بھی زائد ہے۔

سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اب تک دو لاکھ 98 ہزار سے زائد کیسز جب کہ دو ہزار 441 اموات رپورٹ کی جا چکی ہیں۔

ایجنسی کے ڈائریکٹر کا کہنا ہے کہ تھینکس گیونگ کی چھٹیوں کے دوران سفر کرنے والوں اور بالمشافہ ملنے والوں کی تعداد میں اضافے کے باعث کیسز میں بڑھے ہیں۔

انہوں نے لوگوں سے اپیل کی کہ کیسز میں اضافہ اگلے ایک یا دو ہفتوں تک جاری رہ سکتا ہے لہذا لوگ تقریبات منسوخ یا ملتوی کر دیں۔

21:47 25.9.2021

امریکہ میں بوسٹر خوراک کے اہل افراد ویکسین لگوائیں: صدر بائیڈن

امریکہ کے صدر جو بائیڈن نے جمعے کے روز ان امریکیوں پر، جو کرونا سے بچاؤ کی ویکسین کی بوسٹر خوراک لگوانے کے اہل ہیں، زور دیا کہ وہ ویکسین کا بوسٹر انجیکشن لگوائیں۔

اس کے ساتھ ساتھ انہوں نے ویکسین نہ لگوانے والوں سے ایک بار پھر اپیل کی کہ وہ حفاظتی ویکسین لگوا لیں۔

صدر کا یہ پیغام بیماریوں سے بچاؤ اور تحفظ کے امریکی مراکز (سی ڈی سی) کی جانب سے مخصوص افراد کے لیے بوسٹر خوراک لگوانے کی منظوری کے اعلان کے ایک دن بعد سامنے آیا ہے۔

سی ڈی سی کے اعلان میں کہا گیا ہے کہ معمر اور کمزور قوت مدافعت رکھنے والے ایسے افراد جنہیں فائزر کی ویکسین لگوائے چھ ماہ سے زیادہ ہو چکے ہیں، وہ ویکسین کو بوسٹر خوراک لگوانے کے اہل ہیں۔

وائٹ ہاؤس سے جاری بیان میں صدر بائیڈن نے کہا ہے کہ منظوری کا مطلب یہ ہے کہ تقریباً چھ کروڑ امریکی فائزر ویکسین کی دوسری خوراک لگوانے کے چھ ماہ گزر جانے کے بعد بوسٹر شاٹ کے اہل ہو گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جس طرح شروع میں ویکسین مفت لگائی گئی تھی۔ اسی طرح بوسٹر خوراک بھی مفت اور آسانی سے دستیاب ہے۔

مزید جانیے

21:43 25.9.2021

بھارت کا آئندہ ماہ سے ویکسین برآمد کرنے کا اعلان

بھارت کے وزیرِ اعظم نریندر مودی نے امریکہ میں کواڈ کے تحت ہونے والے اجلاس میں کہا ہے کہ آسٹریلیا، جاپان اور امریکہ کے ساتھ طے کردہ معاہدے کے مطابق بھارت کرونا ویکسین کی 80 لاکھ خوراکیں رواں سال اکتوبر تک برآمد کرنے کی اجازت دے گا۔

بھارت کے سیکریٹری خارجہ ہرش وردھن کا صحافیوں سے گفتگو میں کہنا تھا کہ بھارت ‘جانسن اینڈ جانسن’ کی 80 لاکھ خوراکیں فراہم کرے گا۔

سیکریٹری خارجہ کا مزید کہنا تھا کہ ویکسین کی ادائیگی کواڈ سے کی جائے گی اور بھارت اس میں اپنا حصہ بھی دے گا۔ یہ کواڈ کی طرف سے انڈو پیسیفک کو سب سے جلد فراہمی ہو گی۔

اس سے قبل کواڈ ممالک کے مابین طے پائے جانے والے معاہدے کے تحت بھارت نے 2022 کے اختتام سے پہلے براعظم ایشیا کو ایک ارب خوراکیں فراہم کرنی تھیں۔ البتہ دنیا بھر میں سب سے زیادہ تعداد میں ویکسین بنانے والے ملک بھارت میں وبا میں اضافے کے سبب رواں سال اپریل میں ویکسین کی برآمدات پر پابندی عائد کر دی گئی تھی۔

21:39 25.9.2021

کووڈ 19 ویکسین کی ترقی پذیر ملکوں کو مفت فراہمی، بائیڈن کا مزید 50 کروڑ خوراکیں خریدنے کا اعلان

امریکی صدر جو بائیڈن نے بدھ کو کووڈ 19 کی ویکسین کی 50 کروڑ سے زیادہ خوراکیں خریدنے کا اعلان کیا، جنھیں آئندہ سال تک ترقی پذیر ملکوں میں تقسیم کیا جائے گا۔

اس سے قبل امریکہ نے آئندہ سال جون تک ترقی پذیر ملکوں میں تقسیم کے لیے فائزر اور بایو این ٹیک ویکسین کے 50 کروڑ خوراکیں خریدنے کا اعلان کیا تھا۔ آج کے اعلان کے بعد خریدی جانے والے ویکسینز کی خوراکوں کی کل تعداد ایک ارب ہو جائے گی، جسے دنیا کے کم آمدن والے ملکوں میں تقسیم کیا جائے گا۔

حکومتی اعلان سے قبل بدھ کو اپنی ایک ٹوئٹ میں امریکی وزیر خارجہ اینٹنی بلنکن نے کہا کہ ''ہم نے اب تک امریکی عوام کے بازو میں جتنی ویکسین لگائی ہیں، اس سے تین گنا زیادہ ہم دنیا کو فراہم کریں گے''۔

امریکہ کووڈ 19 کی وبا کو شکست دینے کے ارادے میں پرعزم ہے۔ ہم آج عالمی سطح پر مفت تقسیم کے لیے ویکسین ڈوزز کی تعداد بڑھا کر ایک ارب دس کروڑ سے زیادہ خوراکیں کر رہے ہیں۔

مزید پڑھیے

17:43 23.9.2021

بزرگ اور شدید بیمار امریکیوں کے لیے فائزر ویکسین کے بوسٹر شاٹ کی منظوری

امریکہ میں خوراک و ادویات کے نگراں ادارے (فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن یا ایف ڈی اے) نے پینسٹھ سال اور اس سے زائد عمر کے امریکی شہریوں اور شدید بیماری کے خطرات سے دوچار افراد کے لیے 'فائزر بائیو ٹیک' کے تیسرے شاٹ کی منظوری دے دی ہے۔

ایف ڈی اے نے بدھ کو اپنے فیصلے میں مخصوص پیشوں سے وابستہ افراد جن میں محکمۂ صحت کے ملازمین، اساتذہ، گروسری اسٹورز کے ملازمین، بے گھر افراد کے لیے بنائے گئے شیلٹرز اور جیلوں میں رہنے والے افراد کے لیے بھی بوسٹر (قوت مدافعت بڑھانے والے) شاٹ کی منظوری دی ہے۔

ایف ڈی اے کی جانب سے یہ منظوری جمعرات کو سینٹر فار ڈیزیز کنٹرول اینڈ پری ونشن (سی ڈی سی) کے مشاورتی کمیٹی کی اس رائے شماری کے لیے راہ ہموار کر سکتی ہے جس میں یہ تعین کیا جائے گا کہ امریکی شہریوں کا کون سا گروپ فائزر بوسٹر شاٹ کا اہل ہے۔

سی ڈی سی پینل نے بدھ کے روز ایک اجلاس منعقد کیا جس کا مقصد اس بات پر تبادلۂ خیال کرنا تھا کہ بوسٹر شارٹ کے لیے کس کو ترجیح دی جائے۔

یہ ایک ایسا متنازع فیصلہ ہے جو اس کے کئی ماہ بعد لیا جا رہا ہے جب صدر جو بائیڈن نے پہلی مرتبہ اعلان کیا تھا کہ ان کی انتظامیہ کرونا کی ویکسین کی دوسری خوراک کے آٹھ ماہ بعد بوسٹر شاٹ دینے کا ارادہ رکھتی ہے۔

مزید پڑھیے

17:40 23.9.2021

کرونا وبا ایک سال میں ختم ہو جائے گی، موڈرنا کے چیف ایگزیکٹو کا دعویٰ

کرونا وائرس کی ویکسین تیار کرنے والی امریکی کمپنی موڈرنا کے چیف ایگزیکٹو نے دعویٰ کیا ہے کہ ایک سال کے اندر کرونا وائرس کی وبا پر قابو پا لیا جائے گا۔

سوئس اخبار کو دیے گئے انٹرویو میں موڈرنا کے چیف ایگزیکٹو اسٹیفن بینسل نے کہا کہ ویکسین کی فراہمی میں تیزی سے دنیا کی بیشتر آبادی کو ویکسین لگ جائے گی، حتیٰ کے نومولود بچوں کے لیے بھی ویکسین دستیاب ہو گی۔

اُن کا کہنا تھا کہ اگر گزشتہ چھ ماہ کے دوران ویکسین کے پیداواری عمل میں تیزی کا جائزہ لیں تو پتا چلتا ہے کہ آئندہ برس کے وسط تک اتنی ویکسین دستیاب ہو گی کہ دنیا کے ہر فرد کے لیے یہ دستیاب ہو گی۔

اسٹیفن بینسل نے دعویٰ کیا کہ ایک سال تک دنیا کی سرگرمیاں معمول پر آ جائیں گی۔

16:22 23.9.2021
مزید
مزید

XS
SM
MD
LG